کرونا مریضوں کو طبی سہولیات فراہم کرنے کوویڈ ٹاسک فورس کا آغاز

ذمرہ ریاست
مئی 27, 2021

ایس آئی او کے اس ٹاسک فورس کے ذریعہ اب تک تقریباً 6000 لوگوں کی کی گئی مدد

ملک بھر میں کرونا کے مریض آکسیجن ، اسپتال بیڈس اور دیگر طبی سہولیات کی تلاش میں پریشان ہیں، ان پریشان کن حالات میں اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا (ایس آئی او) نے پریشان حال لوگوں کی فوری و ممکنہ امداد کرنے اور وسائل سے مربوط کرنے کے لئے رضاکاروں کی ایک وسیع قومی ٹیم تشکیل دی ہے۔

ایس آئی او تلنگانہ کے دفتر پر موجود کوویڈ کال سنٹر

'کوڈ ریلیف ٹاسک فورس' کے نام سے ریاست بھر میں ۱۰۰۰ سے زیادہ والنٹیرز متحرک ہو چکے ہیں ، جو چوبیس گھنٹے اس چیز کو یقینی بنانے میں مصروف ہیں کہ کرونا مریضوں کو آکسیجن ، اسپتال بیڈس ، پلازمہ ، دوائیں اور دیگر طبی سہولتیں وقت پر دستیاب ہوجائیں۔ ہندوستان بھر میں اور بالخصوص تلنگانہ میں ایس آئی او کے افراد مصروف ہیں۔ اس کام کے آغاز سے اب تک والنٹیرز کی ٹیم نے8000 کے قریب کوویڈ مریضوں کی درخواستوں کو وصول کیا ہے اور تقریباً 6000 مریضوں کو وسائل فراہم کنندگان کے بارے میں تصدیق شدہ معلومات فراہم کی ہیں۔اس کے علاوہ ڈاکٹرس کے ذریعہ آن لائن مدد بھی فراہم کی جارہی ہے جس کے لئے ۱۵۴ نوجوان ڈاکٹروں کی ٹیم بھی موجود ہے۔

مریض اپنی ضروریات کو فراہم کردہ 24 گھنٹے سرگرم عمل رہنے والے ہیلپ لائن نمبر اور سوشل میڈیا کے ذریعے طلب کرتے ہیں ، جبکہ والنٹیرزریاست بھر میں وسائل کی نشاندہی کرلیتے ہیں اوردستیابی کے بارے میں معلومات کی تصدیق کرتے ہیں اور ان معلومات کےذریعہ مریضوں کو فوراً مدد فراہم کرتے ہیں۔ ان تمام کاموں کو مربوط کرنے کے لئے حیدرآباد میں واقع ایس آئی او کے ریاستی دفتر پر کنٹرول روم قائم کیا گیا ہے۔

ایس آئی او کے ریاستی صدر ڈاکٹر طلحہ فیاض الدین نے کہا کہ: ریلیف کے کاموں میں حصہ لینا اور ضرورت کے وقت لوگوں کی مدد کرنا درحقیقت اسی کی طرف تعلیم ترغیب دلاتی ہے۔لہذا اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا طلبہ و نوجوانوں کونہ صرف تعلیم کے صحیح مقصد سے سےواقف کراتی ہے اس کے ساتھ ساتھ انہیں لوگوں کی مدد کرنے اور لوگوں کے لئے نافع بننے کی طرف بھی ترغیب دلاتی ہے۔ کرونا کی دوسری لہر نے ملک کو بری طرح متاثر کیا، ایسی نازک صورتحال میں طلبہ و نوانوں کی طرف سے ہمیں زبردست تعاون ملا۔ تقریباً ۱۰۰۰ نوجوانوں نے ڈسک اور فیلڈ ورک کے لئے رجسٹریشن کروایا۔ ہم نے ایک ہیلپ لائن نمبر 7303373374 جاری کیا جس سے لوگوں کو صحیح وقت پر آکسیجن، اسپتال بیڈ، پلازمہ اور دیگر طبی سہولیات فراہم کئے جارہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا ہمارے والنٹرس گراونڈ سے بیڈس، آکسیجن ، پلازمہ وغیرہ کا ڈاٹا جمع کرتے ہیں جسے ہر چھ گھنٹے میں اپڈیٹ کیا جاتا ہے، ہیلپ لائن کا نظام بہت آسان ہے جس سے عام لوگ آسانی سے مدد حاصل کرسکتے ہیں۔ یہ کام آگے چل کر مزید بڑھنے کے امکانات ہے جس میں ہمیں مزید والنٹرز کی ضرورت ہوگی۔

 ایس آئی او نے ۳۰ /اپریل کوایک ہیلپ لائن نمبر جاری کیا جو کہ مکمل 24 گھنٹے سرگرم عمل رہےگا۔ ریاست میں پھیلے تمام مریضوں کی مدد کے لئے ضلعی سطح پر بھی والنٹیئر کی ٹیمیں تشکیل دی گئیں۔ ایس آئی او کی ضلعی یونٹس نے پلازمہ عطیہ دہندگان کے لیے اندراج کی ایک مہم بھی چلائی ، جن میں سے بہت سے مریضوں کو عطیہ دہندگان سے پلازمہ دیا گیا ، تاہم پلازمہ کی ضرورت بہت زیادہ ہے لیکن عطیہ کرنے والوں کی تعداد بہت کم۔

ڈاکٹر طلحہ نے کہا کہ کہ یہ ایسا وقت ہے جس میں لوگوں کے لئے کسی بھی قسم کی مدد ضروری اور امید افزاں ہے۔اپنی ذمہ داری کو محسوس کرتے ہوئے تکریم انسانیت کے لئے آگے آنا اور لوگوں کی مدد کرنا درحقیقت انسانیت اور ہمدردی کی پہچان ہے۔ اور سماج کے زندگی کا عظیم کارنامہ ہے۔ اس بات پر مجھے فخر ہے کہ ایس آئی او کے نوجوان اس مقدس کام کے لئےسب سے آگے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس ریلیف کے کام کے علاوہ ایس آئی او عوام میں کرونا کے متعلق بڑے پیمانے پر شعور بیداری کا کام بھی انجام دے رہی ہے۔ نظام آباد، حیدرآباد اور عادل آباد میں مفت ماسک کی تقسیم، کارنر میٹ اور دیگر ذریعہ کے استعمال سے لوگوں میں کرونا کی سنگینی اور احتیاطی تدابیر کے سلسلہ میں شعور بیداری پروگام چلائے گئے تاکہ لوگ بیماری سے پریشان ہونے کے بجائے احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہوئے اس بیماری سے محفوظ رہیں۔ دیگر مقامات جیسے کھمم اور محبوب نگر میں مفت کھانے کے پیاکٹس تقسیم کیے جارہے ہیں۔

0 Comments

Urdu

Subscribe To Our Newsletter

Join our mailing list to receive the latest news and updates from our team.

You have Successfully Subscribed!